بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

کتے اور بلی کے رونے اور اُلو کا کسی کے گھرپر بیٹھنے سے بدشگونی

کتے اور بلی کے رونے اور اُلو کا کسی  کے گھرپر بیٹھنے سے بدشگونی

سوال

 کیا فرماتے ہیں علمائے کرام اس مسئلے کے بارے میں کہ کتے اور بلی کے رونے سے کوئی حادثہ واقع ہوتا ہے ؟ اکثر ہمارے یہاں کتے فجر کی اذان کے وقت روتے ہیں، کیا وجہ ہوتی ہے ان کے رونے کی؟ ایسے ہی ہمارے ہاں یہ بھی مشہور ہے کہ اُلو اگر کسی گھر کی چھت پر بیٹھ جائے وہ جگہ برباد ہو جاتی ہے؟

جواب

واضح رہے کہ کتے یا بلی کے رونے کی وجہ سے نہ کسی قسم کے حادثے کا امکان ہوتا ہے، اور نہ الوّ کے کسی کے گھر پر بیٹھنے کی وجہ سے گھر برباد ہوتا ہے، یہ ایک غلط قسم کا عقیدہ ہے جس سے احادیث میں منع کیا گیا ہے اور فجر کی اذان کے وقت یا اوراوقات میں کتے وغیرہ کا آواز نکالنا اتفاقا بھی ہو سکتا ہے اور ممکن ہے کہ شیطان کو دیکھنے کی وجہ سے ہو، اس لیے کہ احادیث میں آتا ہے کہ جب اذان ہوتی ہے تو شیطان وہاں سے بھاگتا ہے۔  فقط واللہ اعلم بالصواب

دارالافتاء جامعہ فاروقیہ کراچی