بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

نہار منھ پانی پینا سنت ہے؟

نہار منھ پانی پینا سنت ہے؟

سوال

 کیا صبح سویرے نہار منھ پانی پینا سنت سے ثابت ہے؟ سنن رسول الله صلی الله علیہ وسلم سے متعلق چند مشہور ومعروف کتب کا نام بھی تحریر فرمائیں۔

جواب

 نہار منھ پانی پینے کو حضور اقدس صلی الله علیہ وسلم کی سنت کہنا درست نہیں، البتہ چوں کہ بعض روایات سے پانی میں شہد ملا کر پینا ثابت ہے، لہٰذا اگر صبح سویرے پانی پینے کے کسی طبی فائدے کو مدِ نظر رکھتے ہوئے کوئی شخص نہار منھ پانی پئے تو اس میں کوئی حرج نہیں۔ (واضح رہے کہ نہار منھ پانی پینے کی ممانعت سے متعلق روایات سند اً شدید ضعیف یا موضوع ہیں، احتیاطاً اس حکم کے ثبوت کا اعتقاد نہ رکھا جائے۔)

:اپنی زندگی کو سنن رسول صلی الله علیہ وسلم سے آراستہ کرنے کے لیے مندرجہ ذیل کتب مفید رہیں گی:
علیکم بسنتی (مولانا مفتی عبدالحکیم سکھروی رحمہ الله) اسوہٴ رسول اکرم صلی الله علیہ وسلم ( ڈاکٹر عبدالحئی عارفی رحمہ الله) پیارے نبی صلی الله علیہ وسلم کی پیاری سنتیں(مولانا حکیم اختر رحمہ الله)۔ فقط واللہ اعلم بالصواب

دارالافتاء جامعہ فاروقیہ کراچی