بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

نابالغ طالب علم کا بغیر وضو کے قرآن پاک اُٹھا کر تلاوت کرنا

نابالغ طالب علم کا بغیر وضو کے قرآن پاک اُٹھا کر تلاوت کرنا

سوال

کیا فرماتے ہیں مفتیان کرام اس مسئلے کے بارے میں کہ طالب علم نابالغ ہوتے ہیں جو استنجاء نہیں کرتے اور بغیر وضو کے قرآن پاک یا قاعدے یا پنج پارے اٹھا کر اس میں تلاوت کرتے ہیں، قرآن وحدیث کی رو سے وضاحت فرما دیجیے۔

جواب

بچوں کے لیے قرآن مجید، قاعدہ، پنج پارہ وغیرہ کو بغیر وضو چھو لینا اور ہاتھوں میں اُٹھا کر پڑھ لینا درستہے، البتہ بچوں کی عادت ڈالنی چاہیے کہ وہ وضو کے ساتھ قرآن مجید، پنج پارے اور قاعدہ اُٹھائیں اور وضو کا طریقہ واستنجاء کے آداب بھی ان کو سکھانے کی کوشش کی جائے۔ فقط واللہ اعلم بالصواب

دارالافتاء جامعہ فاروقیہ کراچی