بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيم

انجیر ہر موسم میں مفید

انجیر ہر موسم میں مفید

حکیم راحت نسیم سوہدروی

قدرت نے انسان کی غذا کے لیے سبزیاں اور پھل پیدا کیے ہیں۔ ہم کہہ سکتے ہیں کہ یہ انسان کی فطری اور اوّلین غذا ہے۔ فطرت کے سائے میں ہی انسان کی عافیت ہے۔ فطرت سے انسان نہیں لڑ سکتا۔ فطرت سے جنگ ہر حال میں انسان کے لیے نقصان دہ ہے۔ قدرت نے انسان کے لیے سبزیوں کے ساتھ پھل بھی پیدا کیے، جو نہ صرف مفید ہیں، بلکہ لذیذ وخوش ذائقہ بھی ہیں اوراپنے موسمی تقاضوں سے ہم آہنگ بھی ہیں۔ انہی پھلوں میں ایک حیرت انگیز فوائد کا حامل پھل انجیر بھی ہے۔ موسمی اثرات کے باعث پاکستان میں تازہ انجیر نہیں ملتا، اس لیے خشک اور چپٹا کرکے دھاگے میں پرو کراسے فروخت کیا جاتا ہے۔ ماہرین ِ صحت نے جسم کو فربہ اور سڈول بنانے کے ساتھ چہرے کی سرخی وسپیدی کے لیے انجیر کو بہت مفید ومؤثر قرار دیا ہے۔

انجیر قبض سے نجات دلاتا اور ہضم کے نظام کو بہتر کرتا ہے۔ انجیر مرض ِ قولنج سے محفوظ رکھتا ہے۔ کھانے کے بعددو تین انجیرکھانے سے قبض دور ہو جاتا ہے۔ بلغم ، دمہ او رکھانسی ختم کرنے میں مفیدہے۔ ریشوں سے بھرپور انجیر میں حراروں (کیلوریز) کی مقدار نہ ہونے کے برابر ہوتی ہے۔ مٹاپے کے شکار مرد وخواتین اگر روزانہ تین سے چار انجیر کھائیں تو وزن کم ہونے لگتا ہے۔ جن لوگوں کو بلڈ پریشر رہتا ہے، ان کے جسموں میں سوڈئیم اور پوٹاشیئم کی سطح غیر متوازن ہو جاتی ہے، انجیرکھانے سے ان نمکیات کا توازن قائم رہتا ہے۔ انجیر میں موجود مانع تکسید اجزا (Antioxidants) جسم سے خون کی نالیوں کے لیے نقصان دہ مادّوں کو خارج کر دیتے ہیں۔ اس طرح یہ اجزا سرطان سے بچاؤ بھی کرتے ہیں۔

انجیر غذائیت سے بھرپور پھل ہے۔ یہ جسم کو در کار فولاد کی روزانہ کی دو فی صد کی ضرورت کو پوری کرتا ہے۔ انجیر میں کیلشیئم ہوتا ہے، جو ہڈیوں اور دانتوں کے لیے بہت اہم اور مفید ہے۔ علاوہ ازیں انجیر میں لحمیات (پروٹینز)، گلوکوس اور فاسفورس بھی پائے جا تے ہیں۔ انجیر آنتوں کو صاف کرتا ہے۔ آنتوں کی صفائی کے لیے روزانہ رات کو سونے سے قبل چار پانچ انجیر نیم گرم دودھ سے کھانے سے بہت فائدہ ہوتا ہے۔ انجیر نہ صرف بلڈ پریشر میں فائدہ مند ہے، بلکہ خون بھی بناتا ہے۔ انجیر دُبلے افراد کے لیے بھی مفیدہے۔ یہ منھ کی بو ختم کرتا ہے او ربالوں کو دراز کرنے میں معاون ہے۔ تلّی کے ورم میں دو تین انجیر کھانے سے فائدہ ہوتا ہے۔

تازہ انجیر توڑنے سے جو دودھ نکلتا ہے، اس کے چند قطرے برص کے نشانات پر لگانے سے نشانات ختم ہوجاتے ہیں۔ جن افراد کو پسینا نہ آتا ہو یا مسام بند ہوں، ان کے لیے بھی انجیر مؤثر ثابت ہوتا ہے۔ اس کے علاوہ یہ دماغی کم زوری، کمر کے درد اور بواسیر سے چھٹکارا دلاتا ہے۔

انجیر بچوں کے لیے بھی مفید ہے۔ یہ ہاضم ہونے کے علاوہ جسمانی نشو ونما میں بہت مؤثر ہے۔ انجیر ہمیشہ تازہ اور نرم کھائیں۔ کالے اور خشک انجیر میں بعض اوقات کیڑے پیدا ہو جاتے ہیں، اس لیے یہ انجیر مضر صحت ہوتا ہے۔